حصہ : بین الاقوامی -+

زمان اشاعت : یکشنبه, 30 اکتبر , 2022 خبر کا مختصر لنک :

ترکیہ نے سینکڑوں پناہ گزینوں پر ’تشدد‘ کر کے انہیں شام واپس جانے پر مجبور کیا ہے، ہیومن رائٹس واچ

آریانانیوز: ہیومن رائٹس واچ نے اعلان کیا ہے کہ ترک حکام نے فروری سے جولائی 2022 تک سینکڑوں شامی مہاجرین کو ملک بدر کیا اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے انہیں شام واپس جانے پر مجبور کیا۔


یورونیوز کے مطابق ترک حکام نے ملک بدر کیے گئے شامیوں کو ان کے گھروں، کام کی جگہوں اور گلیوں سے گرفتار کیا اور رضاکارانہ واپسی کے فارم پر دستخط کرنے اور شمالی شام واپس جانے پر مجبور کیا۔

ہیومن رائٹس واچ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ شامی پناہ گزینوں کی ملک بدری کا عمل ترکیہ کے ایک ایسے ملک کی حیثیت کے ساتھ تضاد رکھتا ہے کہ جس میں مہاجرین کی سب سے زیادہ تعداد موجود ہے۔

شریک یي کړئ!
[bws_google_captcha]

منتخب خبریں

    تازہ ترین خبریں